مرکز ابلاغ

امارات پوسٹ ای ایم ایس پرہونے والے یو پی یو کے ورکشاپ اورعلمی مذاکرے کی میزبانی کرتا ہے۔
24 MAR 2015

امارات پوسٹ ای ایم ایس پرہونے والے یو پی یو کے ورکشاپ اورعلمی مذاکرے کی میزبانی کرتا ہے۔

عالمگیر مراسلاتی اتحاد (یو پی یو) کے زیرانتظام دنیا بھر کے مراسلاتی منتظمین کی جانب سے فراہم کردہ ایکسپریس میل سروس (ای ایم ایس) میں جدید رحجانات پر چار روزہ ورکشاپ اور علمی مذاکرے کا آغاز پیر کو دبئی میں ہوا جس میں بارہ عرب ممالک کی مراسلاتی انتظامیہ کے نمائندوں نے شرکت کی۔

امارات پوسٹ گروپ کی میزبانی میں منعقد ہونے والی اس تقریب کو یو پی یو مرکزِ مراسلاتی ٹیکنالوجی اور فرانس کے مراسلاتی گروپ کی حمایت حاصل تھی۔ ورکشاپ کا موضوع 'خطۂ عرب میں ای ایم ایس کے ذریعے معیار خدمت، سلسلۂ رسد اور برقی تجارت کی ترقی' تھا۔

‏اس موقع پر پڑھے جانے والے پیغام میں یو پی یو بین الاقوامی شعبے کے ڈائریکٹر جنرل جناب بشار اے۔حسین نے بیان کیا کہ دنیا بھر میں خطوط کے حجم میں مسلسل کمی جبکہ بنڈلوں اور پارسلوں کی ترسیل میں مسلسل اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔ انہوں نے برقی تجارت کے باعث سامنے آنے والے نئے مواقعوں کی وجہ سے، جن میں کاروبار سے کاروبار(بی ٹو بی) اور کاروبار سے صارف (بی ٹو سی) بھی شامل ہیں، مال تجارت کی آمدورفت میں حالیہ برسوں میں ہونے والے اضافے کی جانب بھی اشارہ کیا۔

انہوں نے 2014 میں ای ایم ایس برآمدات کے 54.5 ملین اشیاء تک پہنچ جانے کا انکشاف کیا جو 2013 کے اعداد و شمار سے نو فی صد ( %9) زیادہ ہے۔ سب سے زیادہ یعنی بتیس فی صد(%32) اضافہ یورپ میں دیکھنے کو ملا جس کے بعد خطۂ عرب بارہ فی صد (%12)،ایشیا پیسیفک آٹھ فی صد (%8) اور کیریبین تین فی صد (%3) کا نمبر آتا ہے۔

حسین صاحب نے مزید کہا کہ"مراسلاتی خدمات میں جدت لانے اور گاہکوں کی توقعات پر بہتر طریقے سے پورا اترنے کے لیے یو پی یو اسی طرح مراسلاتی منتظمین سے پیشہ ورانہ مہارت کے حصول میں تعاون جاری رکھے گا"۔

یو پی یو ای ایم ایس تعاون کے رئیس پیٹرک رائیکون نے ابتدائیہ کلمات ادا کیے۔ اس کے بعد "برقی تجارت - علاقائی و عالمگیر رحجانات اورگاہکوں کا نقطۂ نظر"پر ایک اجلاس ہوا جس میں عالمگیر رحجانات اور مراسلاتی اداروں کے لیے مواقع، مراسلاتی تجارت میں آسانی اور مراسلاتی نیٹ ورک کے ذریعے تجارت میں یو پی یو کی معاونت کے اقدامات جیسے موضوعات زیر بحث آئے۔

دوسرے اجلاس میں، جس کا موضوع "مارکیٹ کی ضروریات کو پورا کرنے کی غرض سے مراسلاتی اداروں کی درجہ بندی" تھا، یو پی یو برقی تجارت پروگرام، برقی تجارت آئی ٹی بنیادی ساخت، یو پی یو برقی تجارت رہنمائی، محفوظ برقی تجارتی لین دین، اور فرانس کے مراسلاتی گروپ کے برقی تجارتی تجربات پرعملی مظاہرے شامل تھے۔

تیسرے اجلاس میں، جس کا موضوع "مارکیٹ کی ضروریات کو پورا کرنے کی غرض سے ای ایم ایس کی تدبیری اور کاروباری ترقی" تھا، متعدد مقررین نے خطۂ عرب میں ای ایم ایس تجربات پر بات چیت کی۔

امارات پوسٹ کے بین الاقوامی تعلقات و حساب کتاب کے ماہر ناصر فتحی قدومی نے امارات پوسٹ میں ای ایم ایس کے کلیدی خدوخال اور کامیابیوں کا ذکر کیا جس میں ای ایم ایس سعودی پوسٹ کے جنرل مینیجر مساعد البطل اور ای ایم ایس بین الاقوامی کرونوپوسٹ مراکش کے ڈائریکٹر آف آپریشنز انوال عوحید نے بھی حصہ لیا۔


شارك برأيك
X
صوت العميل
لائیو چیٹ