مرکز ابلاغ

امارات پوسٹ گروپ نے نظر ثانی شدہ تدبیری منصوبہ برائے 2017 تا 2021 پر بات چیت کی ہے
11 NOV 2015

امارات پوسٹ گروپ نے نظر ثانی شدہ تدبیری منصوبہ برائے 2017 تا 2021 پر بات چیت کی ہے

امارات پوسٹ گروپ کے شعبہَ حکمتِ عملی نے ای پی جی کے نظر ثانی شدہ تدبیری منصوبہ برائے 2017 تا 2021 پر تبادلہء خیال کرنے کے لیے متفقہ غوروخوض کی ورکشاپ کا انعقاد کیا جس میں مالیات، انسانی وسائل، صحت اور حفاظت کی کاروائیاں، تجارت، حکمتِ عملی، مالی پڑتال اور انفارمیشن ٹیکنالوجی سمیت کئی شعبوں کے عہدیداران نے شرکت کی۔

منصوبے کے قابل عمل ہونے اور اس کے دیگر پہلوؤں کا احاطہ کرنے کے لیے دو ورکشاپس کا انعقاد کیا گیا تھا جن کا مقصد ایک ایسے مربوط تصور کی تشکیل تھا جو اگلے پانچ سالوں میں گروپ کی رہنمائی کر سکیں۔ ان ورکشاپس میں کارکردگی کے ان کلیدی مظاہر پر بحث کی گئی جنہیں 2021 کے اہداف کی نشاندہی سے قبل موجودہ صورتحال کے تجزیے سے لے کر سال کے آنے والے دنوں میں اپنے اہداف اور حکمت عملی کے اقدام کے اعلان تک استعمال کیا جائے گا۔

دوسرے دور میں ان اقدامات کے تحت گروپ کی پرعزم حکمت عملی کی عکاسی کے لیے تعداد اور معیار کے ان اہداف کی نشاندہی کی جائے گی جو باہمی تفریق اور درپیش مشکلات کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے ترقی یافتہ ممالک کے موجودہ رحجانات پر مبنی ہوں گے۔

ای پی جی کے قائم مقام سی ای او جناب فہد الحوسنی نے اس بات پر زور دیا کہ تدبیری منصوبہ اگلے سات سال کے لیے گروپ کے ایک راہِ عمل کے طور پر کام کرے گا، انہوں نے مزید کہا کہ مقرر کردہ اہداف کے حصول کی کنجی تمام مدارج سے تعلق رکھنے والے ملازمین ہیں۔

ای پی جی کے چیف کمرشل آفیسر جناب ابراہیم بن کرم نے تبصرہ کیا کہ 2017 تا 2021 کے تدبیری منصوبے کا مقصد تمام شعبوں میں نئی سوچ کا نفاذ اور ان کی وفاقی حکومت کے 2021 تک کے منصوبوں سے ہم آہنگی تھا۔

ورکشاپ نے مستقبل کے رحجانات کی نشاندہی میں مدد دی اور شرکاء کو یہ موقع فراہم کیا کہ وہ موجودہ کارکردگی پر اپنے تبصروں اور اپنے تجزیوں کا اظہار کریں تاکہ مستقبل کی منصوبہ سازی میں مدد مل سکے۔ بن کرم صاحب نے مزید کہا کہ، یہ سب کچھ تخلیقی سوچ بڑھانے کےعمل، ایس ڈبلیو او ٹی تجزیے اور تبادلہ خیال کے ذریعے کیا گیا۔


شارك برأيك
X
صوت العميل
لائیو چیٹ