مرکز ابلاغ

امارات پوسٹ گروپ کی جانب سے سمارٹ سروسز کے منصوبے کی تکمیل پر سمارٹ فون صارفین کی طرف سے تیز مانگ دیکھنے میں آئی۔
03 MAY 2015

امارات پوسٹ گروپ کی جانب سے سمارٹ سروسز کے منصوبے کی تکمیل پر سمارٹ فون صارفین کی طرف سے تیز مانگ دیکھنے میں آئی۔

اپنی تمام سروسز کی آن لائن پلیٹ فارم پر منتقلی کا منصوبہ مکمل کرنے والے امارات پوسٹ گروپ نے صارفین کے مضبوط ردعمل کی رپورٹ دیتے ہوئے بتایا کہ اس منصوبے نے ماہانہ 1.2 ملین سے زائد صارفین کی توجہ اپنی طرف مبذول کروائی ہے اورصارفین کے اطمینان کے درجے کو 94 فیصد تک بڑھایا ہے۔

آن لائن سروسز سے استفادہ کرنے والوں کی تعداد میں ہونے والا یہ اضافہ امارات پوسٹ گروپ کے اپنی برقی خدمات کو ہر طرح کے موبائل آلہ جات سے ہم آہنگ بنانے کے پُر عزم منصوبے کا نتیجہ ہے۔ اس منصوبے کا آغاز یو اے ای حکومت کے سمارٹ گورنمنٹ اقدام سے متاثر ہو کر کیا گیا تھا کیونکہ یو اے ای میں موبائل فون کی سرائیت کی شرح دنیا کے بلند ترین شرح رکھنے والوں میں سے ایک ہے۔

سمارٹ سروسز کا یہ منصوبہ یو اے ای کے نائب صدر اور وزیر اعظم اور دبئی کے حاکم عزت مآب شیخ محمد بن راشد المکتوم کے متنوع شعبہ جات میں صارفین کے شرح اطمینان میں اضافے کے لیے جاری کردہ اس اقدام سے متاثر ہو کر کیا گیا جو یو اے ای کے عوام کی آسودہ حالی میں اضافے کے وسیع تر تصور سے منسلک ہے۔

"سمارٹ سروسز متحدہ عرب امارات کی حکومت کی جانب سے جدید ٹیکنالوجی اور موبائل آلہ جات کو استعمال میں لاتے ہوئے صارفین کو متعدد ذرائع سے خدمات کی فراہمی میں سہولت کے امتیازی تصور کا ایک حصہ ہے۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ تازہ ترین عالمی سروے کے مطابق یو اے ای میں موبائل فون صارفین کی شرح دنیا میں سب سے زیادہ ہونے کی بناء پر اسےعالمی سطح پر پہلے درجے پر شمار کیا جاتا ہے۔"

امارات پوسٹ گروپ کے تیار کردہ منصوبے کے تحت ای پی جی کی ویب سائٹ پر سب سے زیادہ استعمال ہونے والی خدمات جو کہ اب موبائل آلہ جات پر بھی دستیاب ہیں ان میں: ای۔ پی او باکس (آنے والی مراسلاتی ڈاک کی تلاش کے لیے) جن کی رکنیت کی تعداد پہلی سہ ماہی میں 74 ہزار سے تجاوز کر چکی ہے؛ ٹریک اینڈ ٹریس کے علاوہ؛ ڈاک خانوں کے محل وقوع کے نقشے؛ صارفین کے سوالات، شکایات اور تجاویز کی پیشگی؛ شکایات سے باخبر رہنا اور ریٹ کیلکولیٹرشامل ہیں۔

انہوں نے وضاحت کی کہ سمارٹ سروسز میں 'ای گریٹنگ' سروس شامل ہے جو صارفین کو ڈراپ ڈاؤن مینیو سے گریٹنگ کارڈز کو منتخب کرنے یا ایک گریٹنگ کارڈ کو اپنی مرضی کے مطابق کرنے کے قابل بناتی ہے۔ یہ ایک نیا تصور ہے جو صارفین کو ایک ورچوئل کارڈ کو حقیقی کارڈ میں بدلنے کے قابل بناتا ہے،جسے دنیا میں کہیں بھی ای پی جی کے ذریعے بھیجا جاسکتا ہے۔ یہ سروس صارفین کو اس قابل بھی بناتی ہے کہ وہ نہ صرف تقریبات اور خاص موقعوں کے دعوت نامے بلکہ اشتہاری مہمّات بھی بھیج سکیں۔

انہوں نے 'برقی ٹکٹ' سروس کے بارے میں بھی بات کی جو ٹکٹ جمع کرنے والوں کو اس قابل بناتی ہے کہ وہ دنیا کے کسی بھی حصّے سے یو ای اے کی ٹکٹوں کا آرڈر دے سکتے ہیں اور کریڈٹ کارڈز استعمال کرتے ہوئے آن لائن ادائیگی کے بعد اپنی دہلیز پر انہیں حاصل کر سکتے ہیں۔

ای پی جی کے چیف کمرشل آفیسر،جناب ابراہیم بن کرم کے مطابق برقی تجارت کے افتتاح سے سمارٹ سروسز کی طلب میں بہت زیادہ اضافہ ہو گا،کیوں کہ برقی تجارت ویب سائٹ پر برقی مصنوعات اور دیگر اشیاء کی ایک لمبی فہرست نمایاں کرے گا،اور خریداروں کو آن لائن آرڈر کرنے اور مراسلاتی نیٹ ورک کے ذریعے ان کے حصول کے قابل بنا دے گا۔

1۔ یو پی یو کے اعداد و شمار کا حوالہ دیتے ہوئے، انہوں نے اس بات کا اظہار کیا کہ 2012 کے دوران پارسل میں بین الاقوامی لین دین کی تعداد 61 ارب پارسل تک بڑھ چکی ہے، اور اس کی تعداد 2020 تک 2 ٹریلین سے بڑھ جانے کی توقع ہے۔ اس کے لئے آن لائن مصنوعات کی تعمیر و ترقی کی کوششوں میں دو گنا اضافے کی ضرورت ہے۔


شارك برأيك
صوت العميل
لائیو چیٹ